تازہ ترین



سیکشن: خبریں

حق نہ ملا تو گریبان پر ہاتھ ڈالیں گے اسفندیار

shadow
صوابی.......عوامی نیشنل پارٹی کے سربراہ اسفندیار ولی نے کہا ہے کہ سارک کانفرنس میں4ممالک کا شرکت نہ کرنا خارجہ پالیسی کی ناکامی ہے۔ خارجہ پالیسی مکمل ناکام ہو چکی ہے۔ اسے از سر مرتب کرنا ہو گا۔ پختون اور بلوچ سب کچھ خاموشی سے برداشت نہیں کریں گے۔ صوابی میں احتجاجی جلسے سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ہمارا احتجاج سی پیک کے خلاف نہیں وزیراعظم کی وعدہ خلافی کے خلاف ہے۔ سی پیک اچھا منصوبہ ہے لیکن سی پیک سے پورے خطے کیلئے فائدہ ہونا چاہئیے۔ انصاف اور بلا تفریق منصوبے بنائے جائیں تو ہر قسم کے تعاون کیلئے تیار ہیں۔ منصوبے کے روٹ سے صرف چند لوگوں کو فائدہ نہیں ہونا چاہیے۔حالات ٹھیک ہونے کے بعد سی پیک کے منصوبے پر وزیراعظم کی وعدہ خلافی کے خلاف بھرپور احتجاج کریں گے۔آن لائن کے مطابق انہوںنے کہا کہ حق نہیں دیا جاتا تو ولی خان کی بات دہراتا ہوں کہ ہاتھ پکڑیں گے اورگریبان میں ہاتھ ڈالیں گے لیکن اپنا حق ضرور لیں گے۔ انہوں نے کہا کہ نواز شریف ایک مرتبہ پھر پختونوں کے ساتھ وعدہ خلافی کر رہے ہیں۔ اب وہ وعدہ خلافی برداشت نہیں کریں گے۔ اپنے حقوق لے کر رہیں گے۔ چاہے اس کے لیے کسی بھی حد تک جانا پڑے۔چین کے ذرائع ابلاغ میں ایسی خبریں آ ئیں اور نقشے بھی دکھائے گئے جن میں مغربی روٹ کا کوئی ذکر نہیں ۔وزیر اعظم نواز شریف آل پارٹیز کانفرنس میں یہ وعدہ کر چکے ہیں کہ مغربی روٹ اقتصادی راہداری کا حصہ ہے اور یہ مشرقی روٹ سے پہلے مکمل ہو گا۔اسفندیار نے وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا پرویز خٹک سے کہا کہ وہ وفاق سے اپنا حق لیں اگر ایسا نہیں کر سکتے تو پھر استعفی دیں۔
 
1